1. محترم مہمان السلام علیکم! فروغ نعت فورم میں سوشل شیئر کا آپشن شامل کیا گیا ہے۔ جب آپ کوئی نیا موضوع شروع کرتے ہیں تو موضوع کے شروع ہو جانے پر موضوع کے اوپر یہ آپشن ظاہر ہوتا ہے اس آپش پر کلک کرنے سے مختلف سوشل نیٹ ورکس کے آئکان ظاہر ہوتے ہیں آپ اپنی پسند کے نیٹ ورک پر اسے شائع کر سکتے ہیں۔میری دوستوں سے درخواست ہے کہ جب بھی کوئی کلام فورم میں شامل کریں تو سوشل شیئر بٹن کے ذریعہ اس کو فیس بک ، ٹویٹر اور گوگل پلس وغیرہ پر بھی شیئر کر دیا کریں اور اگر ممکن ہو تو جس کا کلام ہو اس کی فیس بک وال پر بھی شیئر کیا کریں تاکہ فورم کی ٹریفک میں اضافہ ہو اور لوگوں کی آمد و رفت رہے۔ جوکہ اس فورم کی مقبولیت کے لیے بہت ضروری ہے۔

مناقب اولیا بدل یا فرد جو کامل ہے یا غوث ( از امام احمد رضا خان) ۔ حدائقِ بخشش حصہ دوم

'مناقب اولیا' میں موضوعات آغاز کردہ از ابوالمیزاب اویس, ‏اپریل 8, 2017۔

  1. ابوالمیزاب اویس

    ابوالمیزاب اویس ــــ:ناظمِ فروغ نعت:ــــ رکن انتظامیہ رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    829

    بدل یا فرد جو کامل ہے یا غوث
    تِرے ہی در سے مستکمل ہے یا غوث

    جو تیری یاد سے ذاہل یا غوث
    وہ ذکر اللہ سے غافل ہے یا غوث

    اَنَا السَّیَّاف سے جاہل ہے یا غوث
    جو تیرے فضل پر صائل ہے یا غوث

    سخن ہیں اصفیا، تو مغزِ معنیٰ
    بدن ہیں اولیا، تو دل ہے یا غوث

    اگر وہ جسمِ عرفاں ہیں تو تو آنکھ
    اگر وہ آنکھ ہیں تو تل ہے یا غوث

    اُلوہیّت نبوّت کے سوا تو
    تمام افضال کا قابل ہے یا غوث

    نبی کے قدموں پر ہے جز نبوّت
    کہ ختم اس راہ میں حائل ہے یا غوث

    اُلوہیّت ہی احمد نے نہ پائی
    نبوّت ہی سے تو عاطل ہے یا غوث

    صحابیّت ہوئی پھر تابعیت
    بس آگے قادری منزل ہے یا غوث

    ہزاروں تابعی سے تو فزوں ہے
    وہ طبقہ مجملاً فاضل ہے یا غوث

    رہا میدان و شہرستان عرفان
    تِرا رَمنا تِری محفل ہے یا غوث

    یہ چشتی، سہروردی، نقشبندی
    ہر اک تیری طرف مائل ہے یا غوث

    تِری چڑیاں ہیں تیرا دانہ پانی
    تِرا میلہ تِری محفل ہے یا غوث

    انھیں تو قادری بیعت ہے تجدید
    وہ ہاں خاطی جو مستبدل ہے یا غوث

    قمر پر جیسے خور کا یوں تِرا قرض
    سب اہلِ نور پر فاضل ہے یا غوث

    غلط کردم تو واہب ہے نہ مقرض
    تِری بخشش تِرا نائل ہے یا غوث

    کوئی کیا جانے تیرے سر کا رتبہ
    کہ تلوا تاجِ اہلِ دل ہے یا غوث

    مشائخ میں کسی کی تجھ پہ تفضیل
    بحکمِ اولیا، باطل ہے یا غوث

    جہاں دشوار ہو وہمِ مساوات
    یہ جرأت کس قدر ہائل ہے یا غوث

    تِرے خدّام کے آگے ہے اک بات
    جو اور اقطاب کو مشکل ہے یا غوث

    اُسے اِدبار جو مُدْبر ہے تجھ سے
    وہ ذی اقبال جو مقبل ہے یا غوث

    خدا کے در سے ہے مطرود و مخذول
    جو تیرا تارک و خاذل ہے یا غوث

    ستم کوری وہابی، رافضی کی
    کہ ہندو تک تِرا قائل ہے یا غوث

    وہ کیا جانے گا فضلِ مرتضیٰ کو
    جو تیرے فضل کا جاہل یا غوث

    رضؔا کے سامنے کی تاب کس میں
    فلک وار اس پہ تیرا ظل ہے یا غوث

    حدائقِ بخشش ۔ حصہ دوم
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1