1. محترم مہمان السلام علیکم! فروغ نعت فورم میں سوشل شیئر کا آپشن شامل کیا گیا ہے۔ جب آپ کوئی نیا موضوع شروع کرتے ہیں تو موضوع کے شروع ہو جانے پر موضوع کے اوپر یہ آپشن ظاہر ہوتا ہے اس آپش پر کلک کرنے سے مختلف سوشل نیٹ ورکس کے آئکان ظاہر ہوتے ہیں آپ اپنی پسند کے نیٹ ورک پر اسے شائع کر سکتے ہیں۔میری دوستوں سے درخواست ہے کہ جب بھی کوئی کلام فورم میں شامل کریں تو سوشل شیئر بٹن کے ذریعہ اس کو فیس بک ، ٹویٹر اور گوگل پلس وغیرہ پر بھی شیئر کر دیا کریں اور اگر ممکن ہو تو جس کا کلام ہو اس کی فیس بک وال پر بھی شیئر کیا کریں تاکہ فورم کی ٹریفک میں اضافہ ہو اور لوگوں کی آمد و رفت رہے۔ جوکہ اس فورم کی مقبولیت کے لیے بہت ضروری ہے۔

مناقب اولیا برتر قیاس سے ہے مقامِ ابو الحُسین (از امام احمد رضا خان)

'مناقب اولیا' میں موضوعات آغاز کردہ از ابوالمیزاب اویس, ‏مارچ 5, 2017۔

  1. ابوالمیزاب اویس

    ابوالمیزاب اویس ــــ:ناظمِ فروغ نعت:ــــ رکن انتظامیہ رکن فروغ نعت

    پیغامات:
    829

    در منقبت سیدنا ابو الحسین احمد نوری قدس سرہ الشریف
    کہ وقت مسند نشینی حضرت ممدوح در 1297 ھ عرض کردہ شد


    بر تر قیاس سے ہے مقامِ ابو الحسین
    سدرہ سے پوچھو رفعتِ بام ابو الحسین

    وارستہ پائے بستۂ دامِ ابو الحسین
    آزاد نار سے ہے غلامِ ابو الحسین

    خطِّ سیہ میں نورِ الٰہی کی تابشیں
    کیا صبحِ نور بار ہے شام ابو الحسین

    ساقی سنادے شیشۂ بغداد کی ٹپک
    مہکی ہے بوئے گل سے مدامِ ابو الحسین

    بوئے کبابِ سوختہ آتی ہے مے کشو!
    چھلکا شرابِ چشت سے جامِ ابو الحسین

    گلگوں سحر کو ہے سَہَرِ سوزِ دل سے آنکھ
    سلطانِ سہرورد ہے نامِ ابو الحسین

    کرسی نشیں ہے نقشِ مراد اُن کے فیض سے
    مولائے نقش بند ہے نامِ ابو الحسین

    جس نخلِ پاک میں ہیں چھیالیس ڈالیاں
    اک شاخ ان میں سے ہے بنامِ ابو الحسین

    مستوں کو اے کریم بچائے خمار سے
    تا دورِ حشر دورۂ جامِ ابو الحسین

    اُن کے بھلے سے لاکھوں غریبوں کا ہے بھلا
    یا رب زمانہ باد بکامِ ابو الحسین

    میلا لگا ہے شانِ مسیحا کی دید ہے
    مُردے جِلا رہا ہے خرامِ ابو الحسین

    (ق)
    سر گشتہ مہر و مہ ہیں پر اب تک کھلا نہیں
    کس چرخ پر ہے ماہِ تمامِ ابو الحسین

    اتنا پتا ملا ہے کہ یہ چرخِ چنبری
    ہے ہفت پایہ زینۂ بامِ ابو الحسین

    ذرّے کو مہر، قطرے کو دریا کرے ابھی
    گر جوش زن ہو بخششِ عامِ ابو الحسین

    یحییٰ کا صدقہ وارث اقبال مند پائے
    سجادۂ شیوخِ کرامِ ابو الحسین

    انعام لیں بہار جناں تہنیت لکھیں
    پھولے پھلے تو نخل مرامِ ابو الحسین

    اللہ ہم بھی دیکھ لیں شہزادہ کی بہار
    سونگھے گل مراد مشامِ ابو الحسین

    آقا سے میرے ستھرے میاں کا ہوا ہے نام
    اس اچھے ستھرے سے رہے نامِ ابو الحسین

    یا رب وہ چاند جو فلکِ عزّ و جاہ پر
    ہر سیر میں ہو گام بگامِ ابو الحسین

    آؤ تمھیں ہلالِ سپہرِ شرف دکھائیں
    گردن جھکائیں بہرِ سلامِ ابو الحسین

    قدرت خدا کی ہے کہ طلاطم کناں اٹھی
    بحرِ فنا سے موجِ دوامِ ابو الحسین

    یا رب ہمیں بھی چاشنی اس اپنی یاد کی
    جس سے ہے شکّریں لب و کامِ ابو الحسین

    ہاں طالعِ رؔضا تِری اللہ رے یاوری
    اے بندۂ جُدودِ کرامِ ابو الحسین

    حدائقِ بخشش ۔ حصہ اول

    • پسندیدہ پسندیدہ x 1