1. محترم مہمان السلام علیکم! فروغ نعت فورم میں سوشل شیئر کا آپشن شامل کیا گیا ہے۔ جب آپ کوئی نیا موضوع شروع کرتے ہیں تو موضوع کے شروع ہو جانے پر موضوع کے اوپر یہ آپشن ظاہر ہوتا ہے اس آپش پر کلک کرنے سے مختلف سوشل نیٹ ورکس کے آئکان ظاہر ہوتے ہیں آپ اپنی پسند کے نیٹ ورک پر اسے شائع کر سکتے ہیں۔میری دوستوں سے درخواست ہے کہ جب بھی کوئی کلام فورم میں شامل کریں تو سوشل شیئر بٹن کے ذریعہ اس کو فیس بک ، ٹویٹر اور گوگل پلس وغیرہ پر بھی شیئر کر دیا کریں اور اگر ممکن ہو تو جس کا کلام ہو اس کی فیس بک وال پر بھی شیئر کیا کریں تاکہ فورم کی ٹریفک میں اضافہ ہو اور لوگوں کی آمد و رفت رہے۔ جوکہ اس فورم کی مقبولیت کے لیے بہت ضروری ہے۔

تنقیدی مشاعرہ سائرہ خان: "غزل جب با وضو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے"

'مذاکرہ بعنوان "غزل جب باوضو ہوجائے"' میں موضوعات آغاز کردہ از شاہ بابا, ‏ستمبر 11, 2016۔

  1. شاہ بابا

    شاہ بابا فضائے نعت میں رہنے سے دل دھڑکتا ہے رکن انتظامیہ

    پیغامات:
    689

    "غزل جب با وضو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے"
    خرد جب مشک بو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    بہارِ رحمتِ عالم کے منظر دیکھ کر سائل
    سراپا آرزو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    تجھے دوں گا میں اتنا جو کہ خود تیری رضا ہو گی
    الہ کی گفتگو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    فقد رانی راءالحق کا بسمل ہر پیمبر ہے
    وہ چہرا روبرو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    چھپا کر اپنے عمامے میں موئے پاک اطہر کو
    جو خالد سرخرو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    لکنی لست کا حد ہے اک اعلان عالم میں
    جو اس پر گفتگو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    تو ہر دم میری آنکھوں میں ہے خود یزداں کا فرمانا
    وہ لمحہ روبرو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    قسم زیتون کی یا طور سینا ، بلد مکہ کی
    خدا بھی روبرو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    اذ ظلموا کی خوشخبری کو جو پا کر یہاں عاصی
    سراپا جستجو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے

    کبھی میزاں کبھی کوثر کبھی پل پر وہ سرور جاں
    سحر بھی سرخرو ہو جائے تیری نعت ہوتی ہے